23

گورنمنٹ کالج ویمن یونیورسٹی فیصل آباد کے دوسرے کانووکیشن میں گورنر پنجاب محمد بلیغ الرحمان نے خصوصی شرکت کی۔ کانووکیشن میں 76 طالبات میں گولڈ، 64 طالبات میں سلور، 52 طالبات میں کے تمغے تقسیم کئے گئے اور 6 ہزار 61 طالبات میں ڈگریاں جاری کرنے کی منظوری دی گئی۔گورنر پنجاب بلیغ الرحمان کا کہنا تھا کہ ایک لڑکی کی تعلیم و تربیت

گورنمنٹ کالج ویمن یونیورسٹی فیصل آباد کے دوسرے کانووکیشن میں گورنر پنجاب محمد بلیغ الرحمان نے خصوصی شرکت کی۔ کانووکیشن میں 76 طالبات میں گولڈ، 64 طالبات میں سلور، 52 طالبات میں کے تمغے تقسیم کئے گئے اور 6 ہزار 61 طالبات میں ڈگریاں جاری کرنے کی منظوری دی گئی۔گورنر پنجاب بلیغ الرحمان کا کہنا تھا کہ ایک لڑکی کی تعلیم و تربیت ایک گھرانے بلکہ نسل کی تربیت کے مترادف ہے۔ خواتین کی یونیورسٹیز بننے سے بہت سی لڑکیوں کو الگ ماحول میں تعلیم کے مواقع ملے۔ پاکستان کی پہلی فاطمہ جناح خواتین یونیورسٹی میاں نواز شریف کے دور میں بنائی گئی تھی۔ گورنر پنجاب محمد بلیغ الرحمان نے کامیابی اور لیڈرشپ پر علامہ اقبال کا شعر بھی پڑھ کر سنایا۔ گورنر پنجاب کا کہنا تھا ہمیں علم، ظرف، خوداعتمادی اور اخلاق سیکھنے پر اپنا وقت لگانا چاہیے۔ یونیورسٹیز کا کام تحقیق اور معاشرتی مسائل کا حل دینا ہے۔ الیکشن میں بھی آپ ووٹ ڈالتے ہوئے تحقیق کریں کے کون اچھا کام کرسکتا ہے۔ تمام پارٹیز کی حکومتوں کا ماضی آپ کے سامنے ہے۔ پچھے کچھ سالوں میں عدم برداشت اور بدتمیزی کو فروغ دیا گیا۔ ہم سب کو مل کر ملک کی بہتری کیلئے کام کرنا چاہیے۔ وائس چانسلر ڈاکٹر روبینہ فاروق نے یونیورسٹی میں نئے پروگرامز اور پراجیکٹس بارے بتایا۔ میڈلز حاصل کرنے والی طالبات میں مدیحہ قاسم، ثانیہ، فضیلہ اکرم، خدیجہ اکرم، ردا سمرین، عظمی، سدرہ شاہد، مہرین جاوید، قرات العین، حافظہ فضا اشفاق، ثانیہ انور، طاہرہ اسد، حلیمہ، اقرا اعظم، عروج عباس، سائرہ اشتیاق، مبرا فاطمہ، مہک ادریس، مومنہ آصف، رابعہ انعم، نبیلہ ناز، بشرہ فریاد، ماریہ خلیل، اقرا جاوید، انعم شہزادی، اقرا اختر، صوفیہ غفار، ماہ نور اسلم، نورین اصغر و دیگر شامل تھیں۔ تقریب میں سابق وائس چانسلر ڈاکٹر نورین عزیز قریشی، ڈاکٹر صوفیہ انور، ایم پی اے فردوس رائے، سابق ایم پی اے ڈاکٹر نجمہ افضل، مختلف یونیورسٹیز کے وائس چانسلرز پروفیسر رخسانہ کوثر، ڈاکٹر محمود سلیم، ڈاکٹر قیصر عباس، ڈاکٹر صائمہ حامد، ڈاکٹر سلیم شوکت، رجسٹرار آصف ملک، کنٹرولر ڈاکٹر رضوانہ تنویر، ٹرسٹی سیلانی ویلفیئر محمد یسین، رخسانہ قمر، یوسف نصیر وہرہ و دیگر سماجی شخصیات، فیکلٹی، والدین اور طالبات نے شرکت کی۔
.
.
.
.

۔
۔
۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں