13

کراچی(رپورٹر سلطان نیوز) گرینڈ ڈیموکریٹک الائنس ( جی ڈی اے ) نے سندھ کی دیگر سیاسی جماعتوں سے رابطہ کرکے انہیں جی ڈی اے میں شمولیت کی دعوت دینے کا فیصلہ

کراچی(رپورٹر سلطان نیوز)
گرینڈ ڈیموکریٹک الائنس ( جی ڈی اے ) نے سندھ کی دیگر سیاسی جماعتوں سے رابطہ کرکے انہیں جی ڈی اے میں شمولیت کی دعوت دینے کا فیصلہ کیا ہے جی ڈی اے کو یوسی اور وارڈ سطح تک فعال کرنے اور سندھ بھر میں ضلعی و تحصیل سطح پر تنظیم سازی مکمل کرکے اضلاع کی دوروں کا بھی فیصلہ کیا ہے یہ فیصلے جمعرات کو فنکشنل لیگ ہاؤس کلفٹن میں ہونے والے جی ڈی اے کے ہنگامی اجلاس میں کئے گئے۔ اجلاس کی صدارت سابق وفاقی وزیر اور جی ڈی اے کے مرکزی رہنما سید صدرالدین شاہ راشدی نے کی۔ اجلاس میں جی ڈی اے کے سیکریٹری جنرل ڈاکٹر صفدر عباسی، سیکریٹری اطلاعات سردار عبدالرحیم اور جی ڈی اے میں شامل جماعتوں کے ارکان اور جی ڈی اے کے ضلعی کنوینر شریک تھے اجلاس میں راضی خان جتوئی، ارکان سندھ اسمبلی پارلیمانی لیڈر حسنین مرزا، نند کمار، عبدالرزاق راہموں،سید جلال شاہ جاموٹ،مظہر راہوجو، سید غضنفر علی شاہ، شفقت حسین شاہ، خضر حیات منگریو، غلام دستگیر راجڑ، ارشد شر بلوچ، مبارک مہر، علی نواز تالپور، عادل خان اُنڑ، اشرف پلیجو، الطاف خاصخیلی، غلام مصطفے جمالی، یاسر جاکھڑو شریک تھے اجلاس میں جی ڈی اے کی تنظیم سازی کے حوالے سے تفصیلی غور و خوض کے بعد تنظیم سازی کے امور کو حتمی شکل دی گئی۔ جی ڈی اے کے سیکریٹری جنرل ڈاکٹر صفدر عباسی نے تنظیم سازی پر اظہار خیال کیا۔ جی ڈی اے اجلاس سے صوبائی کنوینر و سابق وفاقی وزیر سید صدرالدین شاہ راشدی کا کہنا تھا کہ جی ڈی اے قیادت نے سندھ بھر کے اضلاع کے دوروں کا فیصلہ کیا ہے سید صدرالدین شاہ راشدی نے کہا کہ ضلعی تنظیم سازی مکمل ہوکر ہر ضلع میں جائینگے۔دو ہزار اٹھارہ کے انتخابات کے نتائج سب کے سامنے ہیں ہمارے سامنے مخالفین الیکشن لڑنے کے لئے تیار نہیں تھے جزباتی فیصلوں سے گریز کرکے ہمیں مکمل فعال ہونا ہوگا انہوں نے کہا کہ جی ڈی اے میں شامل ہر جماعت کے لئے عزت ہے سندھ کے عوام آپکے ساتھ چلنے کے لئے تیار ہیں سندھ میں بڑا اسپیس ہے لوگ بدحال ہیں عوام جی ڈی اے کی طرف دیکھ رہے ہیں تنظیم سازی کو گراؤنڈ سطح تک پہچانا ہے ہمیں عوام کے درمیان رہنا ہے برادریوں کے معززین کو یوسیز تک تنظیم سازی میں شامل کیا جائے گا۔ سید صدرالدین شاہ راشدی نے برسات اور سیلاب کے متاثرین کی بحالی اب تک نہ ہونے پر تشویش کا اظہار کیا اور کہا کہ سندھ کے عوام بدحال ہیں اور حکمران خوش حال ہوتے جارہے ہیں سندھ میں ترقیاتی کام برائے نام ہیں صرف کاغزات کا پیٹ بھرا جارہا ہے ایسی صورتحال ہمیں آگے بڑھنا ہے مستقبل میں سندھ میں لیڈ کرینگے انہوں نے کہا کہ نوجوانوں کو آگے آنے کی ضرورت ہے سب دوستوں کو ساتھ لیکر چلیں گے صرف ہمیں ہمت کرنا ہوگی سندھ کی تمام برادریوں کو آن بورڈ رکھیں گے ہمیں آج سے محنت کا آغاز کرنا ہے۔ اس موقع پر ڈاکٹر صفدر عباسی کا کہنا تھا کہ آج سندھ کو تباہ کردیا گیا ہے عوام مشکلات کا شکار ہیں حکمران جماعت کا یہ حال ہے کہ وہ بلدیاتی الیکشن سے فرار حاصل کررہے ہیں یہ عوام میم جانے کے قابل نہیں ہیں عوام جی ڈی اے کو سندھ میں اپنا نجات دہندہ سمجھ رہی ہے۔ جی ڈی اے کے سیکرٹری اطلاعات سردار عبدالرحیم نے اپنے خطاب میں اجلاس کے شرکاء سے تشکر کا اظہار کیا اور کہا کہ جی ڈی اے واحد الائنس ہے جو انتخابات کے بعد آج تک قائم ہے اس اتحاد کو مزید مضبوط کرینگے غاصب حکمرانوں سے سندھ کے عوام کو جلد نجات دلائینگے سردار عبدالرحیم کا کہنا تھا کہ سیلاب متاثرین کو حکمرانوں نے بے یارو مددگار چھوڑ دیا ہے عوام آج تک کھلے آسمان کے نیچے پڑے ہیں لوگوں کی فصلیں گھر اور مویشی تباہ ہوگئے ہیں دنیا بھر سے امداد آئی لیکن وہ نام نہاد حکمرانوں نے اپنے گوداموں میں بھر لی اور غریب عوام کو انکے حال پر چھوڑ دیا۔ لیکن ہم اپنے عوام کو تنہا نہیں چھوڑینگے۔ اجلاس میں شریک جی ڈی اے عہدیداروں نے مختلف تجاویز بھی دیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں