162

گڑھ مہاراجہ کی اہم شخصیات کے بارے جو سلسلہ تحریر شروع کیا گیا ہے آج ذکر ہو گا مہر فخر عباس ڈب صاحب کا جن کا تعلق صا حبزادہ گروپ سے ہے۔

گڑھ مہاراجہ کی اہم شخصیات کے بارے جو سلسلہ تحریر شروع کیا گیا ہے آج ذکر ہو گا مہر فخر عباس ڈب صاحب کا جن کا تعلق صا حبزادہ گروپ سے ہے۔………,…….
گڑھ مہاراجہ کی ڈب قوم بستی منصور ڈب۔ بستی ماہنی ڈب۔ بستی چاہ سلطان والا۔ بستی دربار میاں جلا ل میں مقیم ہے شروع ہی سے ڈب قوم کی سیاسی قیادت بستی منصور ڈب ہی میں رہی ہے ڈب قوم زراعت پیشہ ہے ڈب قوم کے بڑے گھرانے بستی منصور ڈب ہی سے متعلق ہیں ان میں مہر ربنواز ڈب۔ مہر حقنواز ڈب ۔ مہر محمد نواز ڈب معروف شخصیات ہوئیں ہیں تعلیمی لحاظ سے بستی ماہنی ڈب۔ بستی سلطان والا اور بستی دربار میاں جلال بستی منصور ڈب سے آگے ہے وہاں سے ڈاکٹر۔ پروفیسر۔ کسٹم آفیسر۔ بنک ملازمین ۔ وکلاء ڈب فیملی میں بنے ہیں لیکن تعلیم ہونے کے باوجود سیاست میں ان بستیوں کا کوئی خاص کردار نہ رہا ہے کیو نکہ ڈب قوم سیاسی طور پر صاحب حثییت ہونے کے باوجود سیال خاندان کے تابع فر مان رہی ہے ہاں اگر کبھی سیال اور صاحبزادہ گروپ کا سیاسی الحاق ہوا ہو تو ڈب قوم کے بڑے مہر حقنواز۔ مہر ربنواز۔ مہر محمد نواز صا حبزادہ خاندان کے بھی قریب ہوئے ہیں لیکن بنیادی طور پر یہ لو گ سیال خاندان کی ہی آشیرباد کے مطمعنی رہے ہیں۔ مہر فخر عباس ڈب کے والد حاجی غلام عباس ولد مہر محمد نواز ڈب ہمیشہ سیال خاندان پے شاکی رہے ہیں اور صاحبزادہ خاندان کی جانب ان کا جھکاؤ رہا ہے موجودہ حالات میں مہر فخر عباس ڈب ڈب قوم کے ایک دھڑے کی قیادت کرتے ہیں جس کا تعلق صاحبزادہ گروپ سے ہے ان کے مد مقابل شخصیت مہر لیاقت علی ڈب صاحب ہیں جو کئی بار کونسلر وائس چیرمین اور نا ظم گڑھ مہاراجہ ٹاون کمیٹی اور میونسپل کمیٹی رہے ہیں یہ صا حب سیال گروپ اور کبھی صاحبزادوں کے قریب بھی ہو جاتے ہیں یہ صاحب ہمیشہ مفادات کے تا بع سیاست کرتے ہیں اقتدار کے لئے کوئی قدم بھی اٹھانا پڑے اٹھا جا تے ہیں لوگوں کے مطابق انتہائی مفاد پرست ہیں لیکن مہر فخر عباس ڈب صاحب میں یہ بات نہیں یہ گروپ کے پکے ٹھکے انسان ہیں یہ اقتدار یا ممبری کے لئے بے اصولی کرتے ہوئے نہیں دیکھے گئے ان کی ایک بات مشہور ہے جس گروپ میں ہیں دوسری طرف دیکھتے بھی نہیں ۔
نظریاتی طور پر علاقہ کی ترقی کے خواہشمند ہیں اپنے وارڈ یا اپنے حلقہ اثر تک کافی ترقیاتی کا کروا رہے ہیں صاحبزادہ گروپ نے انہیں ضلعی ممبر بیت المال بھی بنوایا ہے مہر صاحب زراعت کے ساتھ ساتھ صنعتکار بھی ہیں رائس ملز کے مالک ہیں ان کا انداز سیاست عوامی نہیں ہے ڈرائنگ روم کی سیاست ان کا انداز سیاست ہے یہی وجہ ہے اپنے مد مقابل سے زیادہ خوبیوں کے باوجود سیاسی طور پر عوامی حلقوں میں اپنے بے اصول سیاسی مخالف کے برابر جگہ نہیں بنا سکے۔ تعلیمی لحاظ سے انڈر میٹرک ہیں کسی خاص نظریہ کے تحت عوام میں متحرک نہ ہیں ان کی سیاست گروپ بندی کے تحت ہے گڑھ مہاراجہ ٹاون میں ڈباں والا وارڈ میں صا حبزادہ گروپ کے بہترین نمائندہ ہیں۔ گڑھ مہاراجہ ٹاون میں صاحبزادہ گروپ کی حامی شخصیات جو بلا کسی خوف و خطر سیال گروپ کے خلاف صاحبزادہ گروپ کی سیاست کرتے ہیں ان میں سے ایک ہیں یہ لبرل سیاست کرتے ہیں کسی لوکل مہاجر۔ شیعہ سنی تعصب کے قائل نہ ہیں جب بھی کبھی سیاسی ماحول گرم ہو اپنے گروپ کے لئے سرگرم ہو جاتے ہیں اور سیال خاندان کی

سیاست کے خلاف کھل کر بات کرتے ہیں

سلطان نیوز کی طرف سے آئندہ بھی تحریری سلسلہ شروع رہے گا ضرور پڑھئے گا ۔ شکریہ

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں