اسلام آباد: سینئر صحافی اور سابق چیئرمین پیمرا ابصار عالم گولی لگنے سے زخمی ،پولیس ذرائع .کراچی کمپنی مرکز میں تاجروں کا احتجاج* : پنجاب میں کورونا کے وار تیزی سے جاری ہے ، صرف ایک روز میں اب تک کی سب سے زیادہ اموات ریکارڈ کی گئی۔ تفصیلات کے مطابق پنجاب میں کورونا تی *حکومت سے مذاکرات؛ تحریک لبیک کا دھرنے ختم کرنے کا اعلان* *کارکنان کراچی و دیگر شہروں میں دھرنے ختم کردیں صرف لاہور میں مرکزی دھرنا جاری رہے گا، ٹی پی ایل شوریٰ* *حکومت اور کالعدم تحریک لبیک کے درمیان مذاکرات کے نتیجے میں ٹی ایل پی نے ملک بھر میں دھرنے ختم کرکے صرف لاہور کا مرکزی دھرنا جاری رکھنے کا اعلان کردیا* حکومت اور تحریک لبیک کے درمیان مذاکرات جاری ہیں، رات گئے مذاکرات کا تیسرا دور ہوا جس میں حکومت کی جانب سے وزیر داخلہ شیخ رشید، وزیر مذہبی امور نورالحق قادری، گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور، وزیر قانون راجہ بشارت، پولیس اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کے نمائندوں نے شرکت کی۔ ٹی ایل پی کی جانب سے شفیق امینی، ظہیرالحسن شاہ اور مجلس شوری کے دیگر ارکان بھی موجود تھے۔ حکومتی وفد ان علما سے بریفنگ لے کر آیا تھا جو اس سے قبل کوٹ لکھپت جیل میں سربراہ ٹی ایل پی سعد رضوی سے ملاقات کرچکے تھے، ان علما نے حکومتی وفد کو تحریک لبیک کے مطالبات سے آگاہ کردیا تھا جس پر حکومتی وفد ٹی ایل پی کی شوریٰ سے ملنے پہنچا۔ *حکومت کا شیخ رشید کو مستعفی کرنے سے انکار* ذرائع کے مطابق مذاکرات کے دوران تحریک لبیک نے شیخ رشید کے استعفی، سربراہ مولانا سعد رضوی اور گرفتار کارکنوں کی رہائی، مقدمات کے خاتمے اور فرانس کے سفیر کی ملک بدری کا مطالبہ کیا۔ حکومتی وفد نے تمام مطالبات تسلیم کرلیے لیکن فرانس کے سفیر کی ملک بدری اور شیخ رشید کو وزیر داخلہ کے عہدے سے ہٹانے سے انکار کردیا۔ *دھرنے میں ہلاکتوں کی تعداد بڑھا چڑھا کر پیش کی گئی، حکومتی وفد* مذاکرات کے دوران دونوں جانب سے تلخی بھی پیدا ہوئی، حکومتی وفد نے زیادہ تعداد میں مذہبی کارکنوں کی شہادت کو تسلیم کرنے سے انکار کیا اور کہا کہ چند کارکن جاں بحق ہوئے لیکن سوشل میڈیا پر اور تقریروں میں تعداد کو بڑھا چڑھا کر پیش کیا گیا، اگر ایسا ہے تو مرنے والوں کی لاشیں دکھائی جائیں۔ *تحریک لبیک کا لاہور دھرنا جاری بقیہ شہروں میں احتجاج ختم کرنے کا اعلان* ذرائع کا کہنا ہے کہ تحریک لبیک نے احتجاج کو مزید نہ بڑھانے کی یقین دہانی کروا دی ہے۔ اس دوران تحریک لبیک کی شورٰی نے ملک بھر میں دھرنے ختم کرنے اور صرف لاہور میں دھرنا جاری رکھنے کا اعلان کردیا۔ تحریک لبیک کے رہنما شفیق امینی نے کارکنوں کے نام پیغام میں کہا کہ کارکنان ملک بھر میں دھرنے ختم کرکے گھروں کو چلے جائیں صرف لاہور میں مرکزی دھرنا جاری رہے گا۔ *علما کے وفد کی سعد رضوی سے جیل میں ملاقات، ویڈیو بیان جاری کرنے کی اپیل* حکومتی مذکرات سے قبل کالعدم ٹی ایل پی کے سربراہ سعد رضوی سے علما کے وفد نے کوٹ لکھپت جیل میں طویل ملاقات کی جس میں علما نے سعد رضوی سے دھرنا ختم کرانے اور ویڈیو پیغام جاری کرنے کی درخواست کی، علما کا کہنا تھا جلد اچھی خبر سنائیں گے۔ چئیرمین پنجاب قرآن بورڈ صاحبزادہ حامد رضا کی قیادت میں علما کے وفد نے کالعدم تحریک لبیک پاکستان (ٹی ایل پی) کے سربراہ سعد رضوی سے کوٹ لکھپت جیل میں پانچ گھنٹے طویل ملاقات کی جس میں علماء نے سعد رضوی سے احتجاج ختم کرانے کی درخواست کی۔ وفد میں ڈاکٹر ابو الخیر محمد زبیر، ثروت اعجاز قادری، پیر خالد سلطان، میاں جلیل احمد شرقپوری، خواجہ غلام قطب الدین فریدی، پیر نظام الدین سیالوی اور حامد رضا سیالکوٹی شامل تھے۔ وفد کا کہنا تھا کہ یہ وفد سرکاری بلکہ فریقین کے درمیان معاملات کو سلجھانے کی ایک کوشش ہے، ہمیں سرکاری سرپرستی حاصل نہیں۔ مذاکراتی ٹیم نے افطاری بھی سعد رضوی کے ساتھ جیل میں کی اور سعد رضوی کو معاملات افہام و تفہیم کے ساتھ حل کرنے پر قائل کرنے کی کوشش کی۔ علماء نے سعد رضوی سے درخواست کی کہ لاہور کا دھرنا ختم کرایا جائے، مظاہرین سے احتجاج ختم کرنے کی درخواست کی جائے، انتشار اور جلاؤ گھیراؤ سے اپنے ہی ملک کا نقصان ہوا، ملک میں امن و امان کی فضا کو قائم رکھا جائے۔ علما نے سعد رضوی سے مظاہرین کے نام ویڈیو پیغام جاری کرنے کی بھی درخواست کی۔ ذرائع نے بتایا ہے کہ حافظ سعد رضوی نے احتجاج ختم کرنے کے حوالے سے مثبت اشارہ دیا ہے اور کچھ مطالبات علماء کرام کے سامنے رکھے ہیں جن میں فرانسیسی سفیر کی ملک بدری، گرفتار رہنماؤں اور کارکنوں کی رہائی، مقدمات کے خاتمے اور عالمی سطح پر توہین رسالت ﷺ کی روک تھام کے لیے حکومت پاکستان کی جانب سے جدوجہد کرنا شامل ہیں۔ *حکومت اور ٹی ایل پی میں نئے تحریری معاہدے کا امکان* ذرائع کا کہنا ہے کہ حکومت اور کالعدم جماعت تحریک لبیک پاکستان کے درمیان نئے تحریری معاہدے کا امکان ہے اس سلسلے میں کالعدم جماعت کے رہنماؤں کی شوری میں بات چیت جاری ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ چیئرمین قرآن بورڈ پنجاب حامد رضا کی قیادت میں وفد کوٹ لکھپت جیل سے واپسی کے بعد کالعدم جماعت کے مرکز جامعہ مسجد رحمتہ اللعالمین چوک یتیم خانہ گیا اور ٹی ایل پی کے شوری ارکان سے بات چیت کی۔ بعد ازاں علماء کا وفد دوبارہ کوٹ لکھپت جیل پہنچا اور حافظ سعد رضوی کے ساتھ دوبارہ مذاکرات ہوئے۔ *قوم کو جلد اچھی خبر سنائیں گے، صاحبزادہ حامد رضا* اس حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے صاحبزادہ حامد رضانے کہا کہ جلد اس معاملے پر قوم کو خوشخبری سنائیں گے، میڈیا اپنی طرف سے قیاس آرائیاں نہ کرے، ایک مثبت کام کو مثبت طریقے سے انجام تک پہنچانے میں مدد گار بنے ہیں، بریک تھرو ہوا ہے انشاء اللہ مثبت نتیجہ نکل آئے گا۔ انہوں نے بتایا کہ سعد رضوی نے ہمیں کہا ہے کہ وہ محب وطن ہیں اور انہیں کسی کالعد م طالبان کی ہمدردی نہیں چاہیے، سعد رضوی نے کارکنوں کو پرامن رہنے کا کہا ہے۔ ڈاکٹر ابوالخیر زبیر نے کہا کہ قوم امید رکھے معاملات بہتری کی طرف جارہے ہیں، مذاکرات کا پہلا مرحلہ لیہ ڈسٹرکٹ ہسپتال میں کورونا وارڈ کے بیڈ کورونا کے مریضوں سے بھر چکے ہیں۔ خدارا احتیاط کیجئے